Drama behind the Writing of a Drama by Hina Nafees

A situation created by known star Jaweria Saud forced these two ghostwriters, Hina and Huma to pen down their story. According to writers, Jaweria refused to pay them after having them to write episodes of a TV drama. Why did she refuse to pay, it is unclear but the story says that she (Jaweria) did this before with others too and they (Hina and Huma) want to make sure this unjust act come to an end.

I have been involved with media production houses, TV channels and some of the media peoples. I have had front row seat experiences of the ugly side of this business. A reason I didn’t continue in the field. After all the years I was hoping the industry might have been matured the way they do business but sad to see not much have changed.

جویریہ سعود..تصویر کا دوسرا رخ

قلم اپنے ساتھ انصاف چاہتا ہے

Jaweria Saud Pakistani Artist Actor

کچھ سال پہلے کی بات ہے. میں اور ہما جویریہ سعود ( جو کہ ایکسپریس مارننگ شو کرتی ہیں. سب جانتے ہیں) کے پاس سیلری پر رائٹنگ کرتے تھے اس وقت ہم ان کا ڈرامہ پاک ویلہ (جیو) یہ زندگی ہے (جیو) لکھ رہے تھے.

رات گیارہ بجے وقاص بھائی کا فون آیا انھوں نے کہا کہ جویریہ آپی نے کہا ہے کہ کل سے جاب پر نہیں آنا..ہم پریشان..کرائے کا گھر..اتنے آخراجات..ہم رات بھر سو نہیں سکے..میں ہما کو تسلی دیتی..ہما مجھے..اور امی ہم دونوں کو..ہم نے اللہ کو رازق مانتے ہوئے سب اللہ پر چھوڑ دیا. اور پھر اپنی دو مہینے کی پچھلی تنخواہ لینے کی کوشس میں لگ گئے

اسی دوران امی کا ایکسیڈنٹ ہوا اور ان کے فوری آپریشن کے لئے اتنی بڑی رقم کا مسیحاوں کی طرف سے مطالبہ.. خیر اللہ نے مدد کی اور سعود بھائی نے سب کچھ جاننے کے بعد ہم پر احسان کرتے ہوئے ہماری قلیل تنخواہ میں سے بھی (ساٹھ ھزار میری اور ہما کی دو ماہ کی تنخواہ بنتی تھی مگر پچاس ہزار دئے) دے دئے..حالنکہ اس وقت ہمارے لیے ایک ایک روپیہ قیمتی تھا..خیرمشکل وقت تھاگزر گیا..اللہ نے احسان کیا اور جو لوگ پورے مہینے قسطیں لکھوا کر ہمیں دس یا پندرہ ہزار پورے مہینے کہ تنخواہ دیتے تھے آج اس سے زیادہ ایک قسط کے ہم لیتے ہیں.

مگر کسی نے ٹھیک کہا ہے انسان کی فطرت نہیں بدلتی. سعود بھائی نے ہمیں خود کال کر کے “یہی ہے زندگی (ایکسپریس)” لکھنے کو کہا..انھوں نے ریکویسٹ کی کہ جویریہ آپی بزی ہیں ایکسپریس کے مارننگ شو میں. اس لیے میں اور ہما یہی ہے زندگی کی آگے کی قسطیں لکھیں جو ہم نے لکھی. مگر جویریہ سعود ہماری پے منٹ نہیں کر رہے..ہمارے نمبر بلاک کر دئے.

ایک لاکھ ان کے لیے کچھ نہیں ہونگے..مگر ہمیں ہماری محنت کے پیسے چاہیے..ہم کیوں اپنا حق چھوڑیں..لوگ بھول جاتے ہیں کہ یہ سارا مال دنیا میں رہ جائے گا..انسان کا صرف عمل اس کے ساتھ جائے گا..ہم آج مجبور ہیں کہ جویریہ سعود ہم آپ کا کچھ نہیں بگاڑ سکتے مگر قیامت والے دن ہم مجبور نہیں ہوینگے.

یقین جانئیے..نا چاہتے ہوئے بھی ہمیں یہ اسٹیٹس دینا پڑ رہا ہے کیونکہ ہمیں پتا چلا ہے کہ جویریہ سعود نے اور بھی بہت سارے لوگوں کے پیسے کھائے ہیں کسی سے قسطیں لکھوا کر اپنے نام سے ڈرامہ چلانا ہمارے ہاں کا ایک بڑا المیہ ہے…خدارا ایسا نا کریں.

جزاک اللہ

By Hina Nafees Sadaf

0

Categories: Blog,Mix,TV

Leave A Reply

Your email address will not be published.